Awwaaz-Pakistan

آواز پاکستان ایک ایسی ویب سایٹ ہے جہاں آپ کرپشن، ناانصافی اور طاقت کا ناجاۂز استعمال، وڈیو، آڈیو اور تصویر کی شکل میں شاۂع کر سکتے ہیں۔

Awwaaz Pakistan is a website for you to post incidents of corruption, nepotism, misuse of government authority in video, audio and image formats.

The Weekly

LATEST NEWS

* If requested we will refer your experience to the concerned authorities for action and follow-up... * Al-Azizia case: Sharif family requests questionnaire from NAB.....Pakistan seeks recognition of sacrifices in war against terror: COAS......NAB contacts SBP, prepares references against Ishaq Dar....Preparations for state funeral of Dr Ruth Pfau completed ...
Press ESC or click HERE to close the video


صارفین کی جیبوں پر بجلی گرانے کی تیاری کےلئے اوگرا کی سمری تیار

http://www.awwaaz.com/images/stories/صارفین کی جیبوں پر بجلی گرانے کی تیاری کےلئے اوگرا کی سمری تیار
Share on :
Description

اسلام آباد: اوگرا حکام نے ماہ جون کےلئے پٹرولیم کی مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کی سمری وزارت تیل و گیس کو ارسال کردی ہے ۔بھیجی گئی سمری کے مطابق پٹرولیم پروڈکٹس کی قیمتوں میں ممکنہ طور پر 14.6% فیصد اضافہ متوقع ہے ۔اوگرا حکام کے مطابق عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں ہونے والے اضافے کے بعد ملکی قیمتوں میں اضافہ ناگزیر ہے۔ واضح رہے کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمت معمولی اتار چڑھائو کے بعد 50 ڈالر فی بیرل ہوگئی ہے۔ بھیجی گئی سمری کے مطابق قیمتوں میں ممکنہ اضافہ سے ٹرانسپورٹ اور زرعی شعبہ کے زیادہ متاثر ہونے کا امکان ہے کیونکہ ڈیزل کی قیمت ۔9.2% فیصد اضافے کے ساتھ72.52۔ روپے سے بڑھ کر79.21 ہونے کا امکان ہے۔ قیمتوں میں مجوزہ اضافہ 0.85 کے بعد پٹرول کی قیمت 65.12 روپے فی لیٹر ہونے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ صنعتوں میں استعمال ہونے والے لائٹ ڈیزل آئل کی مجوزہ قیمت 11.8% اضافہ کے بعد ممکنہ طور پر بڑھ کر 42.44 روپے فی لیٹر مقرر ہونے کی توقع کی جا رہی ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ممکنہ اضافہ سے صارفین مہنگائی کے بوجھ تلے دب جائیں گے تو دوسری جانب حکومت کو ٹیکس اور لیوی کی مد میں اربوں روپے کا ماہانہ نفع حاصل ہوگا ۔تفصیلات کے مطابق تمام اخراجات ملانے کے بعد پٹرول کی فی لیٹر قیمت ٥٠ روپے لے لگ بھگ ہوتی ہے جبکہ حکومت مختلف ٹیکس کی مد میں صارفین کی جیبوں سے ١٥ روپے نکال کر ماہانہ اربوں کی کمائی کر رہی ہے۔دوسری جانب ڈیزل کی قیمت بشمول تمام ٹیکسوں کے تقریبا45 روپے ہے جبکہ حکومت کو اس کی فروخت پر تقریبا ٢٢ روپے فی لیٹر کی اضافی آمدن پر ہاتھ رنگنے کا موقع بہم مل جاتا ہےاقتصادی ماہرین نے بجٹ اور رمضان کی آمد کے پیشِ نظر حکومت کو قیمتیں نہ بڑھانے کا مشورہ دیا ہے اور شنید ہے کہ شاید حکومت بجٹ سے پہلے قیمتیں برقرار رکھنے کو ہی ترجیح دے۔۔

Add Comment تبصرہ شامل کریں
Comments تبصرے
  • Dua says :

    2016-05-31 04:18:50

    Allah krey k hukmran qemten na e brhayenn

  • Nehan Naseer says :

    2016-05-31 01:06:04

    budget is on the corner and government has shown its intend .,so lets face it.i guess


Visitors Count

Visitors





OR یا

          OR یا





            -Please provide your email or phone number for verification of your upload, Your information will be kept confidential اپلوڈ کی تصدیق کے لیے اپنا ای میل یا فون نمبرفراحم کریں،آپ کی معلومات کو خفیہ رکھا جاۓ گا۔