Awwaaz-Pakistan

آواز پاکستان ایک ایسی ویب سایٹ ہے جہاں آپ کرپشن، ناانصافی اور طاقت کا ناجاۂز استعمال، وڈیو، آڈیو اور تصویر کی شکل میں شاۂع کر سکتے ہیں۔

Awwaaz Pakistan is a website for you to post incidents of corruption, nepotism, misuse of government authority in video, audio and image formats.

The Weekly

LATEST NEWS

* If requested we will refer your experience to the concerned authorities for action and follow-up... * Al-Azizia case: Sharif family requests questionnaire from NAB.....Pakistan seeks recognition of sacrifices in war against terror: COAS......NAB contacts SBP, prepares references against Ishaq Dar....Preparations for state funeral of Dr Ruth Pfau completed ...
Press ESC or click HERE to close the video


من پسند صحافیوں کو سمندر پارنوازنے کا منصوبہ بن گیا

http://www.awwaaz.com/images/stories/من پسند صحافیوں کو سمندر پارنوازنے کا منصوبہ بن گیا
Share on :
Description

اسلام آ باد: با وثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ موجودہ حکومت نے اپنے چہیتے صحافیوں کو ان کی رضا کے مطابق نوازنے کا منصوبہ تیار کرلیا ہے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حکومت نے سمندر پار پاکستانی سفارت خانوں میں پریس انفرمیشن آفیسرز تعینات کرنے کا اصولی فیصلہ کرتے ہوئے من پسند صحافیوں کو درخواستیں جمع کروانے کی ہدایت جاری کردی ہے۔ سینئر صحافیوں نے اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ بہت سے صحافی جو کہ وزیرِ اعظم ہاؤس سے چلنے والے مبینہ میڈیا سیل کی فہرست میں شامل ہیں پہلے ہی درخواستیں جمع کروا چکے ہیں۔ ان انفارمیشن آفیسرز کی تعیناتی کا بظاہر مقصد سمندر پار تجارت بڑھانا اور حکومتی امیج بہتر بنانا بتایا ہے۔ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ وزیرِ اعظم ان تعیناتیوں کی منظوری بھی دے چکے ہیں ۔ماہرین نے حکومت کے اس عمل کو قومی خزانہ پر نیا بوجھ قرار دیتے ہوئے اسے منظورِ نظر صحافیوں کو نوازنے کی اسی پالیسی کا حصہ قرار دیا ہے جس کے تحت حکومت پہلے بھی اپنے ہر دور میں عطاء الحق قاسمی اور عرفان صدیقی کو نوازتی رہی ہے تاکہ سرکاری پالیسیوں کو میڈیا کی معاونت اور تشہیر مل سکے۔ یاد رہے کہ عطاء الحق قاسمی ان دنوں چئیرمین پی ٹی وی تعینات ہیں اور عرفان صدیقی وزیرِ اعظم کے مشیر کی حیثئیت سے حصہ بقدر جثہ اپنی خدمات کا صلہ پا رہے ہیں۔

Add Comment تبصرہ شامل کریں
Comments تبصرے
  • Danial says :

    2016-06-02 05:41:48

    interesting story has shocked me how these people play tricks just to protect their own intranets.

  • Esha says :

    2016-06-02 01:44:25

    ahmad.theek kaha ap ney,,syhed yehi wja hai k n league hukomat ko media se etni tanqeed nhn mlti jtni pp ko mlti rhy hai

  • Ahmad says :

    2016-06-01 11:45:32

    yellow journalism?or white collar corruption? what would you name it?


Visitors Count

Visitors





OR یا

          OR یا





            -Please provide your email or phone number for verification of your upload, Your information will be kept confidential اپلوڈ کی تصدیق کے لیے اپنا ای میل یا فون نمبرفراحم کریں،آپ کی معلومات کو خفیہ رکھا جاۓ گا۔